ہم سے چناں چنیں نہ کرو ہم نشے میں ہیں

عبد الحمید عدم

ہم سے چناں چنیں نہ کرو ہم نشے میں ہیں

عبد الحمید عدم

MORE BYعبد الحمید عدم

    ہم سے چناں چنیں نہ کرو ہم نشے میں ہیں

    ہم جو کہیں نہیں نہ کرو ہم نشے میں ہیں

    نشہ کوئی ڈھکی چھپی تحریک تو نہیں

    ہر چند تم یقیں نہ کرو ہم نشے میں ہیں

    ایسا نہ ہو کہ آپ کی بانہوں میں آ گریں

    آنکھوں کو خشمگیں نہ کرو ہم نشے میں ہیں

    باتیں کرو نگار و بہار و شراب کی

    اذکار شرع و دیں نہ کرو ہم نشے میں ہیں

    یہ وقت ہے عدمؔ کی تواضع کا صاحبو

    تنگ اپنی آستیں نہ کرو ہم نشے میں ہیں

    مأخذ :
    • کتاب : Adam ki behtareen ghazlein (Pg. 69)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے