سکوں مل گیا ہے قرار آ گیا ہے

منور لکھنوی

سکوں مل گیا ہے قرار آ گیا ہے

منور لکھنوی

MORE BYمنور لکھنوی

    سکوں مل گیا ہے قرار آ گیا ہے

    کسی پر ہمیں اعتبار آ گیا ہے

    قفس میں بھی کیسی بہار آ گئی ہے

    قفس میں جو ذکر بہار آ گیا ہے

    ان آنکھوں کو دیکھا ہے مخمور جب سے

    ان آنکھوں میں بھی کچھ خمار آ گیا ہے

    ملا ہے دم صبح شبنم نے غازہ

    یہ کیوں روئے گل پر نکھار آ گیا ہے

    منورؔ کو دیکھا تو کچھ لوگ سمجھے

    سر بزم اک بادہ خوار آ گیا ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY