تمہارے سائے سے اکتا گیا ہوں

آلوک مشرا

تمہارے سائے سے اکتا گیا ہوں

آلوک مشرا

MORE BY آلوک مشرا

    تمہارے سائے سے اکتا گیا ہوں

    میں اپنی دھوپ واپس چاہتا ہوں

    کہو کچھ تو زباں سے بات کیا ہے

    میں کیا پھر سے اکیلا ہو گیا ہوں

    مگر یہ سب مجھے کہنا نہیں تھا

    نہ جانے کیوں میں یہ سب کہہ رہا ہوں

    سبب کچھ بھی نہیں افسردگی کا

    میں بس خوش رہتے رہتے تھک گیا ہوں

    گلہ کرتا نہیں اب موسموں سے

    میں ان پیڑوں کے جیسا ہو گیا ہوں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY