زندگانی جب کہانی ہو گئی

شادان احسن مارہروی

زندگانی جب کہانی ہو گئی

شادان احسن مارہروی

MORE BYشادان احسن مارہروی

    زندگانی جب کہانی ہو گئی

    وہ کہانی خود پرانی ہو گئی

    زندگی نے جو مسرت پائی تھی

    وہ خوشی آنکھوں کا پانی ہو گئی

    جان دی دل دے دیا سودا کیا

    بات یہ ساری زبانی ہو گئی

    بات اس نے راستے میں جب نہ کی

    میں یہ سمجھا وہ سیانی ہو گئی

    داغ دامن پہ ہمارے جو لگے

    کیا یہ الفت کی نشانی ہو گئی

    ان کے آنے سے ہوا مسرور میں

    زندگی کی مہربانی ہو گئی

    عشق نے پھیرا تصور کو مرے

    یہ زمین اب آسمانی ہو گئی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY