گنوار کی رائے

فراق گورکھپوری

گنوار کی رائے

فراق گورکھپوری

MORE BYفراق گورکھپوری

    ایک بار فراق کچھ ہندی کے مصنفوں کی محفل میں پہنچے ادھر ادھر کی باتوں کے بعد گفتگو کا رخ ہندی اور اردو کی طرف مڑ گیا ۔ ہندی کے ایک ادیب نے کہا۔ ’’فراق صاحب!اردو بھی کوئی زبان ہے ۔ اس میں گل و بلبل کے علاوہ اور ہے ہی کیا ! ہلکی پھلکی اور گدگدی پیدا کرنے کے علاوہ سنجیدہ اوراونچے قسم کی فلاسفی سے متعلق باتیں اس زبان میں ادا نہیں کی جاسکتیں۔ آپ بڑے شاعر ضرور ہیں ، لیکن اردو ایک گھٹیا زبان ہے ۔‘‘

    فراق بہت سنجیدگی سے یہ سب سنتے رہے پھر ایک سگریٹ سلگاتے ہوئے کہنے لگے :

    ’’ہرگنوار انسان ، خوبصورت چیز کے بارے میں وہی کہتا ہے ، جو آپ نے اردو کے بارے میں فرمایا ہے ۔‘‘

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY