ہمشیرہ کا خوف اور میرزا کی تسلی

مرزا غالب

ہمشیرہ کا خوف اور میرزا کی تسلی

مرزا غالب

MORE BYمرزا غالب

    ایک دفعہ مرزا صاحب کی ہمشیرہ صاحبہ بیمار ہوئیں ۔ مرزا صاحب ان کی عیادت کو گے ۔اور ان سے پوچھا ۔’’کیا حال ہے ؟‘‘انہوں نے کہا۔’’مرتی ہوں۔ قرض کی فکر ہے ، گردن پر لئے جاتی ہوں۔‘‘ مرزا صاحب فرمانے لگے ۔’’اس میں بھلا فکر کی کیا بات ہے ! خدا کے ہاں کون سے مفتی صدرالدین خاں بیٹھے ہیں جو ڈگری کرکے پکڑوابلائیں گے؟‘‘

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY