ہجڑہ اور کوک شاستر

جوشؔ ملیح آبادی

ہجڑہ اور کوک شاستر

جوشؔ ملیح آبادی

MORE BYجوشؔ ملیح آبادی

    پنڈت ہری چندا اختر صوفی منش ہونے کے باوجود اہل خرابات کی رفاقت کا دم بھرتے تھے ۔ ایک رات جوش ملیح آبادی کی قیادت میں دوسرے میگسار شاعروں کے ساتھ آپ بھی ایک شراب خانے میں چلے گئے ۔ ان کے علاوہ باقی سب حضرات پینے پلانے میں مصروف ہوگئے تو جوش صاحب نے یکدم حیران ہوکر اختر صاحب کی طرف دیکھتے ہوئے پوچھا:

    ’’پنڈت جی! آپ یہ کیا پڑھ رہے ہیں ؟‘‘

    ’’بار کا مینو دیکھ رہا ہوں صاحب!‘‘ اخترصاحب نے مسکراتے ہوئے جواب دیا۔’’کم سے کم شراب کی قسموں اور ان کی قیمتوں سے توواقف ہوجاؤں۔‘‘

    ’’ہوں...‘‘ جوش صاحب نے وہسکی کے گھونٹ حلق سے اتارتے ہوئے کہا۔‘‘ بار کا مینو پڑھتے ہوئے آپ ایسے معلوم ہورہے ہیں جیسے کوئی ہیجڑہ کوک شاستر پڑھ رہا ہو۔‘‘

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY