خس کم جہاں پاک

MORE BYکنور مہیندر سنگھ بیدی سحر

    خس کم جہاں پاک

    ایک دراز ریش، مولانا وضع کے شاعر کسی مشاعرے میں کہہ رہے تھے :

    ’’جوش ایسے ملحد‘ بے دین اور بے اصول آدمی کا ہندوستان سے پاکستان چلے جانا ہی بہتر تھا ۔ خس کم جہاں پاک...!‘‘

    ’’جوش صاحب کے مستقل طور پر پاکستان چلے جانے سے تو یہاں خس کی کمی واقع ہوگی‘ لیکن مولانا اگر آپ پاکستان ہجرت فرماجائیں تو ہندوستان میں کیا چیز کم ہوجائے گی ؟‘‘

    ’’خاشاک‘‘

    کنور مہندر سنگھ بیدی سحر نے دونوں کی گفتگو سن کر نہایت برجستگی سے کہا۔

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY