ہمدردی

علامہ اقبال

ہمدردی

علامہ اقبال

MORE BYعلامہ اقبال

    دلچسپ معلومات

    ( ماخوذ از وليم کو پر ( بچوں کے ليے) (بانگ دراحصہ اول : 1905 تک ( بانگ درا)

    ٹہنی پہ کسی شجر کی تنہا

    بلبل تھا کوئی اداس بیٹھا

    کہتا تھا کہ رات سر پہ آئی

    اڑنے چگنے میں دن گزارا

    پہنچوں کس طرح آشیاں تک

    ہر چیز پہ چھا گیا اندھیرا

    سن کر بلبل کی آہ و زاری

    جگنو کوئی پاس ہی سے بولا

    حاضر ہوں مدد کو جان و دل سے

    کیڑا ہوں اگرچہ میں ذرا سا

    کیا غم ہے جو رات ہے اندھیری

    میں راہ میں روشنی کروں گا

    اللہ نے دی ہے مجھ کو مشعل

    چمکا کے مجھے دیا بنایا

    ہیں لوگ وہی جہاں میں اچھے

    آتے ہیں جو کام دوسروں کے

    مأخذ :
    • کتاب : کلیات اقبال (Pg. 35)
    • Author : علامہ اقبال
    • مطبع : ایجوکیشنل پبلشنگ ہاؤس،دہلی (2014)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY