پندرہ اگست

جمیل فاطمی

پندرہ اگست

جمیل فاطمی

MORE BYجمیل فاطمی

    فرد فرد مست ہے

    پندرہ اگست ہے

    جوش ہے ابال ہے

    رنگ ہے گلال ہے

    گلی گلی ہیں رونقیں

    عجیب سی ہیں رونقیں

    ہم کبھی غلام تھے

    بھارتی غلام تھے

    زندگی کی شام تھی

    سانس تک غلام تھی

    فرنگیوں کے جور سے

    بھارتی نڈھال تھے

    ظلم جب بہت ہوا

    اپنی حد سے بڑھ گیا

    بھارتی بپھر گئے

    ہم سبھی بپھر گئے

    جان و مال تج دیا

    گھر عیال تج دیا

    ایک ہو گئے جو ہم

    دور ہو گیا الم

    حریت ملی ہمیں

    عافیت ملی ہمیں

    فرد فرد مست ہے

    پندرہ اگست ہے

    مأخذ :
    • کتاب : بچوں کا ماہنامہ امنگ (Pg. 42)
    • Author : جمیل فاطمی
    • مطبع : اردو اکادمی دہلی (اگست 2019)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY