کشمیر

اختر پیامی

کشمیر

اختر پیامی

MORE BY اختر پیامی

    سرخ پھولوں سے لہو پھوٹ رہا ہے شاید

    آج جنت میں جہنم کے نظارے دیکھو

    آج مزدور کے ماتھے کا پسینہ بن کر

    آسمانوں سے بھی ٹوٹیں گے ستارے دیکھو

    آج محکوم نگاہوں کو جلال آیا ہے

    راکھ کی گود میں پلتے ہیں شرارے دیکھو

    آج ایوان حکومت کے ستوں کانپ اٹھے

    کس طرح مڑ گئے یہ خون کے دھارے دیکھو

    جبر اور ظلم کی تاریخ بدل جائے گی

    آج بدلی ہوئی دنیا کے اشارے دیکھو

    آج آنکھوں سے نیا گیت سناتے جاؤ

    خون سے وقت کی یہ آگ بجھاتے جاؤ

    مآخذ:

    • کتاب : Aina Khane (Pg. 111)
    • Author : Akhtar payami
    • مطبع : Zain Publications (2004)
    • اشاعت : 2004

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY