خواب نہیں دیکھا ہے

وسیم بریلوی

خواب نہیں دیکھا ہے

وسیم بریلوی

MORE BY وسیم بریلوی

    میں نے مدت سے کوئی خواب نہیں دیکھا ہے

    رات کھلنے کا گلابوں سے مہک آنے کا

    اوس کی بوندوں میں سورج کے سما جانے کا

    چاند سی مٹی کے ذروں سے صدا آنے کا

    شہر سے دور کسی گاؤں میں رہ جانے کا

    کھیت کھلیانوں میں باغوں میں کہیں گانے کا

    صبح گھر چھوڑنے کا دیر سے گھر آنے کا

    بہتے جھرنوں کی کھنکتی ہوئی آوازوں کا

    چہچہاتی ہوئی چڑیوں سے لدی شاخوں کا

    نرگسی آنکھوں میں ہنستی ہوئی نادانی کا

    مسکراتے ہوئے چہرے کی غزل خوانی کا

    تیرا ہو جانے ترے پیار میں کھو جانے کا

    تیرا کہلانے کا تیرا ہی نظر آنے کا

    میں نے مدت سے کوئی خواب نہیں دیکھا ہے

    ہاتھ رکھ دے مری آنکھوں پہ کہ نیند آ جائے

    مآخذ:

    • Book: Mausam Andar Bahar ke (Pg. 61)
    • Author: Waseem Barelvi
    • مطبع: Maktaba Jamia Ltd. (2007)
    • اشاعت: 2007

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites