نظم

MORE BYشارق کیفی

    اک برس اور کٹ گیا شارقؔ

    روز سانسوں کی جنگ لڑتے ہوئے

    سب کو اپنے خلاف کرتے ہوئے

    یار کو بھولنے سے ڈرتے ہوئے

    اور سب سے بڑا کمال ہے یہ

    سانسیں لینے سے دل نہیں بھرتا

    اب بھی مرنے کو جی نہیں کرتا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے