قلم

MORE BYعادل اسیر دہلوی

    مجھ سے بڑھی ہے علم کی دولت

    دیکھنے میں ہوں میں بے قیمت

    جاہل کو بے زاری مجھ سے

    عالم کی ہے یاری مجھ سے

    مجھ میں شیروں جیسی ہمت

    سچائی ہے میری طاقت

    گرچہ لگتا چھوٹا سا ہوں

    کام بڑے پر میں کرتا ہوں

    دیکھو تو بے کار ہی سمجھو

    لیکن میں انمول ہوں بچو

    تیر نہیں تلوار نہیں میں

    دشمن پر بھی بار نہیں میں

    میری طاقت کو کیا جانو

    دانا ہو تو تم پہچانو

    کام عدالت میں بھی آؤں

    پیار محبت میں بھی آؤں

    خط لکھنا پیغام بھی دینا

    ساتھ میں سب کا نام بھی دینا

    پہچانو تو کون ہوں پیارے

    آتا ہوں میں کام تمہارے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY