Sher Singh Naaz Dehlvi's Photo'

شیر سنگھ ناز دہلوی

1898 - 1962 | دلی, ہندوستان

تخلص : 'ناز'

اصلی نام : شیر سنگھ جین

پیدائش :دلی

وفات : 19 Mar 1962

Relatives : برق دہلوی (استاد)

چوم کر آیا ہے یہ دست حنائی آپ کا

کیوں نہ رکھوں میں کلیجے سے لگا کر تیر کو

شیر سنگھ نازجین دہلوی ۱۸۹۸ میں باڑاہندوراو کے ایک متمول اور ذی علم گھرانے میں پیدا ہوئے ۔ ان کے والد لالہ گردھاری لال جین دہلی کے رئیسوں میں سے تھے ۔ ناز مغربی ادبیات کے مطالعے کے بعد اردو کی طرف آگئے اور شعر کہنے گلے ۔ ابتدا میں نواب سراج الدین خاں سائل دہلوی سے اصلاح لی اس کے بعد برق دہلوی کے تلامذہ میں شامل ہوگئے ۔

اپنے خوبصورت ترنم اور عشق ومحبت کے جذبات سے گندھی ہوئی شاعری کی وجہ سے ناز مشاعروں میں بھی بہت مقبول ہوئے ۔ ۱۹۴۷ کے ہنگاموں کا اثر ناز کی طبیعت پر بہت گہرا پڑا اور وہ ادبی وشعری محفلوں سے کنارہ کش ہوگئے اور گوشہ نشینی اختیار کر لی ۔ ۱۹ مارچ ۱۹۶۲ کو ان کا انتقال ہوا ۔ ناز کا مجموعہ کلام ’’ خدنگ ناز ‘‘ کے نام سے ۱۹۶۲ میں شائع ہوا ۔ 

موضوعات