Zubair Amrohvi's Photo'

زبیر امروہوی

غم تو غم ہی رہیں گے زبیرؔ

غم کے عنواں بدل جائیں گے

کتنے چہروں کے رنگ زرد پڑے

آج سچ بول کر حماقت کی

ہر ایک لمحہ تری یاد میں بسر کرنا

ہمیں بھی آ گیا اب خود کو معتبر کرنا

ایک ہی گھر کے رہنے والے ایک ہی آنگن ایک ہی دوار

جانے کیوں بڑھتی جاتی ہے نفرت بھائی بھائی میں