ایسی دنیا کا اعتبار نہیں

جاوید منظر

ایسی دنیا کا اعتبار نہیں

جاوید منظر

MORE BY جاوید منظر

    ایسی دنیا کا اعتبار نہیں

    کوئی بھی جس میں غم گسار نہیں

    زندگی کو گزارنے والو

    کیا تمہیں اپنا انتظار نہیں

    چاہتوں کا وہاں وجود کہاں

    خواہشوں کا جہاں شمار نہیں

    پھر بھی ہوگا نہیں اسے احساس

    پتھروں سے لہو گزار نہیں

    تم سنو تو سناؤں دل کی بات

    زندگی اس زمیں پہ بار نہیں

    تم نے وعدہ تو کر لیا لیکن

    سانس کا کوئی اعتبار نہیں

    قربتیں ہوں نہ ہوں مگر منظرؔ

    ہم کو دل سے کبھی اتار نہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites