انہیں کیا علم جو ہم کو یہاں سمجھانے آئے ہیں

کنور مہیندر سنگھ بیدی سحر

انہیں کیا علم جو ہم کو یہاں سمجھانے آئے ہیں

کنور مہیندر سنگھ بیدی سحر

MORE BY کنور مہیندر سنگھ بیدی سحر

    انہیں کیا علم جو ہم کو یہاں سمجھانے آئے ہیں

    کہ ہم دیر و حرم ہوتے ہوئے میخانے آئے ہیں

    انہیں بھی دیکھ آئیں اک نظر مجھ سے فرمائیں

    انہیں پر چھوڑتا ہوں جو مجھے سمجھانے آئے ہیں

    ہمیں پوچھو سرور ان کا کہ یہ ساقی کی مست آنکھیں

    ہمارے ظرف سے ناپے ہوئے پیمانے آئے ہیں

    اگر آئے ہیں ناصح آئیں لیکن یہ تو فرما دیں

    سمجھنے آئے ہیں خود یا ہمیں سمجھانے آئے ہیں

    بڑھا چل شوق سے اے عشق کے راہی کہ اس رہ پر

    کہیں بستی بھی آئے گی اگر ویرانے آئے ہیں

    مے گلگوں ہے ساقی ہے سحرؔ واعظ سے کہتا ہے

    ابھی فرمائیں مجھ سے آپ جو فرمانے آئے ہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites