aab-e-gum

मुश्ताक़ अहमद यूसुफ़ी

हूरी नूरानी
1990 | अन्य

पुस्तक: परिचय

परिचय

"آب گم" مشتاق احمد یوسفی کا مزاحیہ شاہکار ہے۔ 1989 میں یہ کتاب پہلی بار منظر عام پر آئی۔ اس کے موضوعات بہت زبردست ہیں۔ اس مجموعے کے بیشتر کردار ماضی پرست، ماضی زدہ اور مردم گزیدہ ہیں، ان کا اصل مرض ناسٹلجیا ہے۔ بس ان کرداروں کی نفسیات اور ان کی ماضی پرستی کو سامنے رکھ کر طرح طرح سے مزاح پیدا کیا گیا ہے، کچھ اس طرح کہ یہ کتاب نہ صرف مشتاق احمد یوسفی کا شاہکار ثابت ہوئی بلکہ اردو طنز و مزاح کی مکمل تاریخ کی سب سے اچھی کتابوں میں شمار کی گئی۔ یوسفی صاحب بہت نرالے اسلوب کے مالک ہیں، ڈاکٹر نورالحسن نقوی لکھتے ہیں، "یوسفی کی تحریروں کا مطالعہ کرنے والا پڑھتے پڑھتے سوچنے لگتا ہے اور ہنستے ہنستے اچانک چُپ ہو جاتا ہے۔ اکثر اس کی آنکھیں بھیگ جاتی ہیں۔" اس کتاب میں موجود گدگداتے جملے اور ان کا منفرد لب و لہجہ والا طنز و مزاح کچھ ایسی باتیں ہیں جو اس کتاب کو بار بار پڑھنے پر آمادہ کرتی ہیں۔ یوسفی صاحب ادنی سے ادنی بات کے کسی پہلو یا زاویے پر ہلکی سی روشنی ڈال کر اس کی طرف قاری کو متوجہ کر چونکا دینا اور پھر خود معصومانہ انداز میں آگے بڑھ جانا یوسفی کے فن کی وہ نزاکت ہے جو صرف انہی کے حصے میں آئی ہے۔

.....और पढ़िए

लेखक की अन्य पुस्तकें

पूरा देखिए

लोकप्रिय और ट्रेंडिंग

पूरा देखिए

पुस्तकों की तलाश निम्नलिखित के अनुसार

पुस्तकें विषयानुसार

शायरी की पुस्तकें

पत्रिकाएँ

पुस्तक सूची

लेखकों की सूची

विश्वविद्यालय उर्दू पाठ्यक्रम