agar mujh se milna hai

Khwaja Ahmad Abbas

Maktaba Jamia Limited, New Delhi
2014 | More Info

About The Book

Description

خواجہ احمد عباس کا نام اردو افسانے میں محتاج تعارف نہیں ہے۔ترقی پسند تحریک سے وابستہ ہوکر انھوں نے کئی اہم افسانے لکھے ہیں۔ان کے افسانوں میں سب سے نمایاں رجحان حقیقت نگاری کا ہے۔اس کے علاوہ انسانی برادری ، وطن دوستی ،درد دل، اورسیکولرزم کے رجحانات ان کے افسانوں کی خصوصیات ہیں۔زیر نظر انتخاب "اگر مجھ سے ملنا ہے" ان کے اٹھارہ نمائندہ افسانے شامل ہیں۔جس میں گہیوں اور گلاب، بھولی، زعفران کے پھول، بھولی،میری موت، اجنتا ،دیا جلے ساری رات، آسمانی تلوار، سردی گرمی ،شکر اللہ کا وغیرہ افسانے اس مجموعے کی وقعیت کو بڑھا رہے ہیں۔افسانہ" اجنتا" فسادات میں انسانیت كی موت پر مصنف كے اضطراب اور بے چین ذہن كی ترجمانی كرتا ہے۔افسانہ "بھولی "میں نچلے طبقے كی لڑكیوں كے والدین كی بے كسی ،بے بسی اور لاچاری اور سیٹھ لوگوں كی ناجائزمانگوں کو موضوع بنایا ہے۔غرض خواجہ احمد کےا فسانوں کے موضوعات کا دائرہ وسیع ہے۔انھوں نے مذہبی ،سیاسی ،سماجی ،بداخلاقی ،تہذیبی موضوعات پر کہانیاں لکھی ہیں۔ان کی بیشتر کہانیاں فسادات کشمیر، تقسیم وطن کا المیہ اور سماج و معاشرے کی برائیوں اور ناانصافیوں کے موضوعات پر مبنی ہیں ۔اس کے علاوہ انھوں نے سیاسی موضوعات پر بھی افسانے لکھے ہیں۔

.....Read more

More From Author

See More

Popular And Trending Read

See More

EXPLORE BOOKS BY

Book Categories

Books on Poetry

Magazines

Index of Books

Index of Authors

University Urdu Syllabus