falsafa kya hai

Meer Valiuddin

Nadwatul-Musannefin, Delhi
1962 | More Info
  • Contributor

    Saeed Ahmad

  • Categories

    Philosophy

  • Pages

    117

About The Book

Description

کہتے ہیں کہ ہر ایک چیز کا کوئی نہ کوئی منبع و مبدا ہوتا ہے ۔ ہر ظاہری وباطنی شے اپنا سِرا رکھتی ہے۔ انسا ن وطن کی نسبت سے مادر وطن لکھتا ہے تو تعلیمی ادارہ کی نسبت سے بھی مادر عملی لکھ کر خراج تحسین پیش کرتا ہے ۔اسی طریقہ سے کہاجاتا ہے کہ فلسفہ تمام علوم کی ماں ہے۔ ہر چیز کا کوئی نہ کوئی فلسفہ ہوتا ہے لیکن نفس فلسفہ کس کوکہتے ہیں۔ اس کے لیے ہر زبان میں کئی کتابیں مل جائیںگی اور فلسفہ کا سرا افلاطو ن و ارسطو تک پہنچے گا ۔کیونکہ دینا میں فلسفہ کے معلمین اول وہی لوگ ہیں۔ ہر علم میں اس علم کی کسی خاص عنصر سے فلسفیانہ اندازمیں بحث کی جاتی ہے جیسے علم ہیئت میں اجرام سماوی سے، ارضیات میں زمین اور چٹانوں سے اور نفسیات میں ذہن ونفس سے جہاں احساس ارادہ اور عقل کی ماہیت پر غور کیا جاتا ہے ۔ الغرض یہ فلسفہ پر مختصر سی کتاب ہے جس میں قرآن اور فلسفہ ، فلسفہ کیا ہے؟ ہم فلسفہ کیوں پڑھیں اور فلسفہ کی دشواریوں پر تحریریں ہیں ۔ فلسفہ سے دلچسپی رکھنے والوں کے لیے ایک عمدہ کتاب ہے جس میں سادگی سے قاری کے ذہن میں اتر نے کی کوشش کی گئی ہے۔

.....Read more

More From Author

See More

Popular And Trending Read

See More

EXPLORE BOOKS BY

Book Categories

Books on Poetry

Magazines

Index of Books

Index of Authors

University Urdu Syllabus