momin khan momin

ज़हीर अहमद सिद्दीक़ी

साहित्य अकादमी, दिल्ली
1985 | अन्य

पुस्तक: परिचय

परिचय

غالب کے بعد مومن خاں مومن عہد زریں کے دوسرے بڑے شاعر ہیں ۔مومن کو اردو کا خالص غزل گو شاعر کہا جاتا ہے۔ ان کی غزلیات میں عاشق و معشوق کے دلوں کی واردات، حسن و عشق اور نفسیاتِ محبت کی باتیں ملتی ہیں۔ اس کے علاوہ مومن کے دیوان میں چند قصیدے اور مثنویاں بھی لکھی ہیں ،ان کو علم نجوم مین بڑی مہارت حاصل تھی۔ ضیاء احمد بدایونی ان کی شاعری کو "مکر شاعرانہ "کا نام دیا تھا۔ زیر تبصرہ مونو گراف مومن خاں مومن کے حوالے سے ہے۔جو کہ 87 صفحات پر مشتمل ہے ، اس مونو گراف کے شروع میں نہایت سادہ انداز میں مومن خاں مومن کی شخصیت اورشاعری کو اس دور کے سیاسی و سماجی پس منظر میں پیش کیا گیا ہے، اور کوشش کی گئی ہے کہ مومن کی شاخصیت اور شاعرکے خدو خال سامنےآجائیں ۔ساتھ ہی ساتھ مومن کے فارسی کلام اور نثر و نظم کا بھی تفصیلی جائزہ پیش کیا گیا ہے۔

.....और पढ़िए

लेखक की अन्य पुस्तकें

पूरा देखिए

लोकप्रिय और ट्रेंडिंग

पूरा देखिए

पुस्तकों की तलाश निम्नलिखित के अनुसार

पुस्तकें विषयानुसार

शायरी की पुस्तकें

पत्रिकाएँ

पुस्तक सूची

लेखकों की सूची

विश्वविद्यालय उर्दू पाठ्यक्रम