rawi par

Gulzar

Maktaba Isteaara, Jamia Nagar, New Delhi
2001 | More Info
  • Contributor

    Ghalib Academy, Delhi

  • Categories

    Short-story

  • Pages

    174

About The Book

Description

گلزار کے افسانوں میں سماجی معنویت، مقصدیت ہے اور جدید عصری حسیت، تہذیبی فضا آفرینی بھی۔ انہیں تہذیبی روایت کا شعور بھی ہے اور تہذیبی لاشعور کا احساس بھی۔ ان کی ہر کہانی کا رنگ دوسری کہانی سے مختلف ہوتا ہے،اور ہر کہانی میں زنگی کا الگ روپ اور تجربہ سامنے آتا ہے،زیر نظر کتاب "راوی پار"ان کے افسانوں کا مجموعہ ہے میں ، اس مجموعہ میں شامل افسانے ، موضوعاتی تنوع اور اسلوبیاتی اختصاص کی وجہ سے انفرادی اہمیت کے حامل ہیں۔کتاب میں "ادّھا"،"مرد"،" راوی پار"وغیرہ ایسے افسانے ہیں جن میں زندگی کی ہمہ جہت بوقلمونیاں ہیں ۔افسانہ "مرد"ماں بیٹے کے رشتے پر ہے،اور "راوی پار"تو گلزارکا انتہائی حساس افسانہ ہے،جسے پڑھ کر رونگٹے کھڑے ہوجاتے ہیں،اس کہانی کا کردار درشن سنگھ ہے جو موجِ حوادث میں گھرا ہوا ہے۔ مسلسل حادثات نے اس سے حواس چھین لیے ہیں۔ یہ ان دنوں کی بات ہے جب ملک تقسیم ہورہا تھا، دلوں کے ٹکڑے ہورہے تھے،خون کی ندیاں بہہ رہی تھیں، خوف و ہراس، سراسیمگی کا تسلط تھا۔ پاؤں تلے سے زمینیں کھسک رہی تھیں۔ آسمانوں سے خوف کی موسلا دھار بارشیں ہورہی تھیں۔ ایسے حالات میں درشن سنگھ اپنی زمین اور اپنی جڑوں سے ہجرت پر مجبور ہوئے اور وہ بھی اپنی بیوی شاہنی کے دو نومولود جڑواں بچے کے ساتھ نکل پڑے،ٹرین کھچا کھچ بھری ہوئی ہے،تل دھرنے کی بھی جگہ نہیں ہے لیکن سفر کرنا ہے اس لیے وہ چھت پہ بیٹھ جاتے ہیں۔ ٹرین کئی نئے علاقوں سے گزرتی ہے۔ جوں جوں ہندوستان کے قریبی شہر آتے جاتے ہیں، لوگوں کے دلوں میں جوش و ولولہ بڑھتا جاتا ہے۔ اسی دوران ایک جڑواں بچے کی حرکت قلب بند ہوجاتی ہے۔ جب راوی آتا ہے تو درشن سنگھ کو مسافر دوست بچے کو راوی میں پھینک دینے کا مشورہ دیتے ہیں۔ درشن سنگھ بچے کو پھینک دیتا ہے اور پھر اپنے دوسرے بچے کی طرف پلٹتا ہے تو دیکھتا ہے کہ مردہ بچہ شاہنی کی چھاتی سے لپٹا ہوا ہے اور زندہ بچہ راوی کی لہروں میں کھوگیا ہے۔

.....Read more

About The Author

Gulzar

Gulzar is a celebrated Indian poet, lyricist, writer, and film director. He got his first break as a lyricist in Bimal Roy's Bandini (1963). A few of his films as a writer include Do Dooni Chaar (1968),  Khamoshi (1970), and Safar (1970) Anand (1971), Guddi (1971), Bawarchi (1972), Namak Haraam (1973), . Gulzar made his directorial debut with Mere Apne (1971). He then went on to make Parichay(1972),  Mausam (1975), Angoor (1982) Namkeen (1982), and the classic films like Achanak (1973), Aandhi (1975), Khushboo (1975), Kinara(1977),and Ijaazat (1987), Lekin... (1990) and Maachis (1996). His television film Mirza Ghalib (1988) was much acclaimed and appreciated in larger circles of viewers. Gulzar has also directed documentaries on Amjad Khan and Pandit Bhimsen Joshi as well as Shaira, a film based on Meena Kumari. He has also written screenplays for films like Masoom (1983) and Rudaali (1993), and has written the lyrics for films like Dil Se (1998) and Saathiya (2002). Has has to his credit poetry books Raat Pashmeeney ki; Pukhraj; Triveni; Raat, Chand aur Main; Mera Kuchh Saamaan; Kharaashein; Khauf; Chhaiyyan Chhaiyyan, Kuchh aur Nazmein. His book of stories for children called Ekta received an award from the National Council for Education, Research and Training.


.....Read more

More From Author

See More

Popular And Trending Read

See More

EXPLORE BOOKS BY

Book Categories

Books on Poetry

Magazines

Index of Books

Index of Authors

University Urdu Syllabus