ساقی کوثر

انیس الرحمان

ساقی کوثر

انیس الرحمان

MORE BYانیس الرحمان

    کوثروتسنیم جنت کی دونہروں کے نام ہیں جو قیامت کے دن محمدؐ کو دی جایئں گی اوروہ جنت میں جانے والے لوگوں کواس سے سیراب کریں گے۔ اسی رعایت سے محمدؐ کو ساقیِ کوثربھی کہا جاتا ہے ۔ کوثرکے پانی کے متعلق طبری نے لکھا ہے کہ یہ برف سے زیادہ ٹھنڈا ، شہد سے زیادہ میٹھا اور دودھ سے زیادہ سفید ہے۔ بعض موقعوں پر حضرت علی کو بھی ساقی کوثر کہا گیا ہے۔ ان تلمیحات کو مندرجہ ذیل اشعار میں بہت خوبصورتی کے ساتھ برتا گیا ہے۔

    بہت سہی غم گیتی شراب کم کیا ہے

    غلام ساقی کوثر ہوں مجھ کو غم کیا ہے

    غالب

    آرزوئے چشمۂ کوثرنہیں

    تشنہ لب ہوں شربت دیدارکا

    ولی دکنی

    لب پہ دلبرکے جلوہ گر ہے جو خال

    حوض کوثر پہ جوں کھڑا ہے بلال

    ولی دکنی

    آتی ہے ندی فرازکوہ سے گاتی ہوئی

    کوثروتسنیم کی موجوں کو شرماتی ہوئی

    اقبال

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY