akbar allahabadi

शम्सुर रहमान फ़ारूक़ी

सलमान ग़नी हाशमी
2002 | अन्य

पुस्तक: परिचय

परिचय

زیر نظر کتاب " اکبر الہ آبادی: نئی تہذیبی سیاست اور بدلتے ہوئے اقدار" فاروقی صاحب کا لکھا ہوا ایک مقالہ ہے یہ مقالہ 14 واں ذاکر حسین خطبہ کے طور پر 12فروری 2002ء میں ذاکر حسین کالج دہلی یونیورسٹی میں پیش کیا گیا تھا۔ 36 صفحات پر مشتمل یہ طویل مقالہ اپنے اندر عنوان کے تناظر میں کئی جہات لیے ہوئے ہے۔ شروع میں اکبر کے سوانحی حالات بیان کیے گیے ہیں اس کے بعد فاروقی صاحب نے اکبرالہ آبادی کی شاعری کے بارے میں عمومی رائے بیان کی ہے۔ فاروقی صاحب نے اکبر کے افکار، نظریات اور سوچ و خیال کو تہذیب کے ساتھ منسلک کیا ہے۔ اور یہ دعوٰی کیا ہے کہ اکبر طنزیہ شاعری کے پس پردہ نئی تہذیب کی گمراہیوں سے آگاہ کر رہے ہیں۔ فاروقی صاحب نے اپنے اس مضمون میں یہ ثابت کیا ہے کہ اکبر ترقی اور روشن خیالی کے خلاف نہ تھے بلکہ وہ ان جملہ مغربی ترقی کے مظاہر کے خلاف تھے جنھوں نے ہندوستانی تہذیب اورمزاج کو بدلنے اور ختم کرنے کی ہر ممکنہ کوشش کی، یوں یہ ترقی ہندوستانی تہذیب، نظام اقدار، طرز فکروحیات اور ہندوستانی مزاج کے خلاف تھی اس لیے اکبر اسے نہ صرف طنز کا نشانہ بناتے ہیں بلکہ اس کو ناپسند کرتے ہوئے اپنی شاعری میں نفرت کا اظہار کرتے ہیں۔

.....और पढ़िए

लेखक की अन्य पुस्तकें

पूरा देखिए

लोकप्रिय और ट्रेंडिंग

पूरा देखिए

पुस्तकों की तलाश निम्नलिखित के अनुसार

पुस्तकें विषयानुसार

शायरी की पुस्तकें

पत्रिकाएँ

पुस्तक सूची

लेखकों की सूची

विश्वविद्यालय उर्दू पाठ्यक्रम