aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

रद करें डाउनलोड शेर

लेखक : मंज़र आज़मी

प्रकाशक : उत्तर प्रदेश उर्दू अकेडमी, लखनऊ

प्रकाशन वर्ष : 1996

भाषा : Urdu

श्रेणियाँ : आंदोलन

उप श्रेणियां : साहित्यिक आंदोलन

पृष्ठ : 620

सहयोगी : असलम परवेज़

urdu adab ke irtiqa mein adabi tahreekon aur rujhanon ka hissa

पुस्तक: परिचय

زندہ زبانوں کی یہ پہچان ہوتی ہے کہ اس کے ادب میں عہد بعد کوئی نہ کوئی تحریک یا رجحان جنم لیتی رہتی ہیں۔ زندہ زبان و ادب ہمیشہ اپنے اندر یہ صلاحیت رکھتی ہے کہ دوسرے زبانوں کی تحریکات کوبھی خود میں سمیٹ لے ۔ شمالی ہند میں ارد و میں جب شاعری شروع ہوئی تو ایہام گوئی کی تحریک نے زور پکڑا ، اس کے بعد ایہام گوئی کی مخالفت کی تحریک چلی ، پھر فارسی و عربی تراکیب کا استعمال کرنا ہے یا نہیں کرناہے کی بحث ہونے لگی۔ اس کے بعد فورٹ ولیم کالج ، دلی کالج ، علی گڑھ تحریک ، اورینٹل کالج لاہور ، علی گڑھ تحریک ، انجمن پنجاب، ترقی پسند، حلقہ ارباب ذوق، جدیدت، مابعد جدید اوراب تانیثیت کارجحان عام ہوا ہے ۔ ایک قلیل مدتی زبان میں اس قدر تحریکات و رجحانا ت کا پیدا ہوجانا زبان کے زندہ ہونے کی دلیل ہوتی ہے ۔ اس کتاب میں مصنف منظراعظمی نے ارد و کے جملہ تحریکات و رجحانات کو جمع کیا ہے ۔ پہلے باب میں ابتدائی دور کے حالات ہیں ، دوسرے باب میں انجمن پنجاب لاہور و دیگر تحریکات کی تفصیلات ہیں ۔ تیسرے باب میں علی گڑھ تحر یک اور اس عہد کے دیگر اہل قلم جو رومانوی و اصلاحی تحریریں لکھ رہے تھے ان کا ذکر ہے ۔پھر ترقی پسند تحریک حلقہ ارباب ذوق ، تحریک ادب اسلامی اور جدیدیت کاذکر ہے ۔ الغرض یہ کتاب اردو ادب کو تحریکات کی روشنی میں جائزہ لینے کے لیے بہت ہی عمدہ ہے۔

.....और पढ़िए

लेखक की अन्य पुस्तकें

लेखक की अन्य पुस्तकें यहाँ पढ़ें।

पूरा देखिए

लोकप्रिय और ट्रेंडिंग

सबसे लोकप्रिय और ट्रेंडिंग उर्दू पुस्तकों का पता लगाएँ।

पूरा देखिए

Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

GET YOUR PASS
बोलिए