دیوان نیاز

شاہ نیاز احمد بریلوی

در مطبع نامی منشی نول کشور، لکھنؤ
1903 | مزید

کتاب: تعارف

تعارف

دیوان نیاز نہایت ہی خوبصورت دیوان ہے جس میں تصوف و عرفان کے مسائل کو اشعار کا موضؤع بنایا گیا ہے۔ ان کے فارسی کلام میں متصوفانہ و عاشقانہ غزل گوئی کو اس میں دیکھا جا سکتا ہے۔ نیز چند مثنویاں بھی دیکھی جا سکتی ہیں ۔ اس کے علاوہ اس دیوان میں ان کا اردو کلام بھی شامل ہے جس میں بھی تصوف کے مسائل بیان کئے گئے ہیں۔

.....مزید پڑھئے

مصنف: تعارف

شاہ نیاز احمد بریلوی

شاہ نیاز احمد بریلوی

شاہ نیاز احمد بریلوی ہندوستان کے صوبہ پنجاب کے قصبہ سرہند (پٹیالہ) میں پیدا ہوئے تعلیم کی غرض سے دہلی گئے اور وہاں پر فخرالدین دہلوی سے ظاہری اور باطنی کسب علوم حاصل کیا سترہ سال کی عمر میں ہی تفسیر، حدیث، اصول اور معقولات و منقولات میں علوم حاصل کیا اور فخرالدین دہلوی صاحب نے انہیں کسب باطن کے لیے بیعت کر لیا۔ جلد ہی اپنے مرشد کے خلیفہ ہوئے اور رشد و ہدایت حاصل کرنے لگے۔ شاہ نیاز احمد بریلوی فخرالدین دہلوی کے خلیفہ میں ممتاز حیثیت رکھتے تھے۔ اپنے پیر مرشد کی صلاح پر ہی انہوں نے بریلی میں سکونت اختیار کی۔ بریلی ان کی مرجع خواص و عام تھی۔ ہندوستان میں تو معروف تھے ہی بیرون ممالک مانند افغانستان، سمرقند، شیراز، بدخشاں اور عرب ممالک میں بھی ان کے عقیدت مند مرید اور خلیفہ بڑی تعداد میں موجود تھے۔  ۷۷ سال کی عمر میں بریلی میں ہی ان کا وصال ہوا۔ ’’تاریخ مشایخ چیشت‘‘ میں پروفیسر خلیق احمد نظامی نے ان کے اردو، فارسی اور عربی کے کل ۹ نصانیف کا ذکر کیا ہے جس میں ایک رسالہ بھی شامل ہے۔ اہم کتاب : دیوان نیازؔ

.....مزید پڑھئے

مصنف کی مزید کتابیں

مزید

مقبول و معروف

مزید

کتابوں کی تلاش بہ اعتبار

کتابیں : بہ اعتبار موضوع

شاعری کی کتابیں

رسالے

کتاب فہرست

مصنفین کی فہرست

یونیورسٹی اردو نصاب