بنام طاقت کوئی اشارہ نہیں چلے گا

محسن نقوی

بنام طاقت کوئی اشارہ نہیں چلے گا

محسن نقوی

MORE BYمحسن نقوی

    بنام طاقت کوئی اشارہ نہیں چلے گا

    اداس نسلوں پہ اب اجارہ نہیں چلے گا

    ہم اپنی دھرتی سے اپنی ہر سمت خود تلاشیں

    ہماری خاطر کوئی ستارہ نہیں چلے گا

    حیات اب شام غم کی تشیبہ خود بنے گی

    تمہاری زلفوں کا استعارہ نہیں چلے گا

    چلو سروں کا خراج نوک سناں کو بخشیں

    کہ جاں بچانے کا استخارہ نہیں چلے گا

    ہمارے جذبے بغاوتوں کو تراشتے ہیں

    ہمارے جذبوں پہ بس تمہارا نہیں چلے گا

    ازل سے قائم ہیں دونوں اپنی ضدوں پہ محسنؔ

    چلے گا پانی مگر کنارہ نہیں چلے گا

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    بنام طاقت کوئی اشارہ نہیں چلے گا نعمان شوق

    موضوعات:

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY