تو اپنی آواز میں گم ہے میں اپنی آواز میں چپ

عبید اللہ علیم

تو اپنی آواز میں گم ہے میں اپنی آواز میں چپ

عبید اللہ علیم

MORE BY عبید اللہ علیم

    تو اپنی آواز میں گم ہے میں اپنی آواز میں چپ

    دونوں بیچ کھڑی ہے دنیا آئینۂ الفاظ میں چپ

    اول اول بول رہے تھے خواب بھری حیرانی میں

    پھر ہم دونوں چلے گئے پاتال سے گہرے راز میں چپ

    خواب سرائے ذات میں زندہ ایک تو صورت ایسی ہے

    جیسے کوئی دیوی بیٹھی ہو حجرۂ راز و نیاز میں چپ

    اب کوئی چھو کے کیوں نہیں آتا ادھر سرے کا جیون انگ

    جانتے ہیں پر کیا بتلائیں لگ گئی کیوں پرواز میں چپ

    پھر یہ کھیل تماشا سارا کس کے لیے اور کیوں صاحب

    جب اس کے انجام میں چپ ہے جب اس کے آغاز میں چپ

    نیند بھری آنکھوں سے چوما دیئے نے سورج کو اور پھر

    جیسے شام کو اب نہیں جلنا کھینچ لی اس انداز میں چپ

    غیب سمے کے گیان میں پاگل کتنی تان لگائے گا

    جتنے سر ہیں ساز سے باہر اس سے زیادہ ساز میں چپ

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    عبید اللہ علیم

    عبید اللہ علیم

    مآخذ:

    • کتاب : Veeran sarai ka diya (Pg. 35)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY