aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

کام اس دنیا میں آ کر ہم نے کیا اچھا کیا

ساحر دہلوی

کام اس دنیا میں آ کر ہم نے کیا اچھا کیا

ساحر دہلوی

MORE BYساحر دہلوی

    کام اس دنیا میں آ کر ہم نے کیا اچھا کیا

    حسن کو بے پردہ نام عشق کو رسوا کیا

    حسن نے اور عشق نے ہنگامہ اک برپا کیا

    شمع کو روشن کیا پروانہ کو شیدا کیا

    بے تمنائی میں آسودہ تھا یا رب کیا کیا

    کس لئے میرے دل دیوانہ کو دانا کیا

    ایک جذبہ تھا ازل سے گوشۂ دل میں نہاں

    عشق کو اس حسن کے بازار نے رسوا کیا

    تیری قسمت کا نوشتہ تھا کسی کا کیا قصور

    تیرے آگے آ گیا اے دل جو تھا تیرا کیا

    نار نے کی سرکشی روز ازل جب اختیار

    خاک کو بخشا شرف یعنی بشر پیدا کیا

    دل کو پروانہ بنایا کر دیا جاں کو نثار

    شمع رو کے عشق میں ہم کیا کہیں کیا کیا کیا

    جو کیا حکم قضا سے ہم نے ساحرؔ تھا بجا

    ہم نے اپنی رائے سے جو کچھ کیا بے جا کیا

    مأخذ:

    Deewan-e-Sahir( Kufr-e-Ishq) (Pg. ebook-73 page-20)

    • مصنف: ساحر دہلوی
      • اشاعت: 1937
      • ناشر: امپیریل پرنٹنگ پریس، دہلی
      • سن اشاعت: 1937

    موضوعات

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے