میرے ہم نفس میرے ہم نوا مجھے دوست بن کے دغا نہ دے

شکیل بدایونی

میرے ہم نفس میرے ہم نوا مجھے دوست بن کے دغا نہ دے

شکیل بدایونی

MORE BYشکیل بدایونی

    میرے ہم نفس میرے ہم نوا مجھے دوست بن کے دغا نہ دے

    میں ہوں درد عشق سے جاں بہ لب مجھے زندگی کی دعا نہ دے

    میرے داغ دل سے ہے روشنی اسی روشنی سے ہے زندگی

    مجھے ڈر ہے اے مرے چارہ گر یہ چراغ تو ہی بجھا نہ دے

    مجھے چھوڑ دے مرے حال پر ترا کیا بھروسہ ہے چارہ گر

    یہ تری نوازش مختصر مرا درد اور بڑھا نہ دے

    میرا عزم اتنا بلند ہے کہ پرائے شعلوں کا ڈر نہیں

    مجھے خوف آتش گل سے ہے یہ کہیں چمن کو جلا نہ دے

    وہ اٹھے ہیں لے کے خم و سبو ارے او شکیلؔ کہاں ہے تو

    ترا جام لینے کو بزم میں کوئی اور ہاتھ بڑھا نہ دے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    شانتی ہیرانند

    شانتی ہیرانند

    منی بیگم

    منی بیگم

    ریتا گانگولی

    ریتا گانگولی

    بیگم اختر

    بیگم اختر

    فریدہ خانم

    فریدہ خانم

    شوبھا گرٹو

    شوبھا گرٹو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY