aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

یہاں کانپ جاتے ہیں فلسفے یہ بڑا عجیب مقام ہے

انور مرزاپوری

یہاں کانپ جاتے ہیں فلسفے یہ بڑا عجیب مقام ہے

انور مرزاپوری

MORE BYانور مرزاپوری

    یہاں کانپ جاتے ہیں فلسفے یہ بڑا عجیب مقام ہے

    جسے اپنا اپنا خدا کہیں اسے سجدہ کرنا حرام ہے

    مری بے رخی سے نہ ہو خفا مرے ناصحا مجھے یہ بتا

    جو نظر سے پیتا ہوں میں یہاں وہ شراب کیسے حرام ہے

    جو پتنگا لو پہ فدا ہوا تو تڑپ کے شمع نے یہ کہا

    اسے میرے درد سے کیا غرض یہ تو روشنی کا غلام ہے

    شب انتظار میں بارہا مجھے انورؔ ایسا گماں ہوا

    جسے موت کہتا ہے یہ جہاں وہ کسی کے وعدے کا نام ہے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    شوما بنرجی

    شوما بنرجی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے