زندگی مجھ کو مری نظروں میں شرمندہ نہ کر

عقیل شاداب

زندگی مجھ کو مری نظروں میں شرمندہ نہ کر

عقیل شاداب

MORE BYعقیل شاداب

    زندگی مجھ کو مری نظروں میں شرمندہ نہ کر

    مر چکا ہے جو بہت پہلے اسے زندہ نہ کر

    حال کا یہ دکھ ترے ماضی کی تجھ کو دین ہے

    آج تک جو کچھ کیا تو نے وہ آئندہ نہ کر

    تو بھی اس طوفان میں اک ریت کی دیوار ہے

    اپنی ہستی بھول کر ہر ایک کی نندہ نہ کر

    سو گنا ہوتے ہوئے بھی جس نے بازی ہار دی

    ایسی بزدل بھیڑ کا مجھ کو نمائندہ نہ کر

    جسم کیا شے ہے کہ میری روح تک جل جائے گی

    آگ میں اپنی جلا کر مجھ کو تابندہ نہ کر

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے