ترقی پسند ادیب کا جنازہ

ساحر لدھیانوی

ترقی پسند ادیب کا جنازہ

ساحر لدھیانوی

MORE BYساحر لدھیانوی

    ترقی پسند ادیب کا جنازہ

    مجروح سلطانپوری نے ساحر لدھیانوی کی کسی بات پر برہم ہوتے ہوئے کہا۔

    ’’یاد رکھو ساحر!جب تم مرجاؤ گے تو اردو کا کوئی ترقی پسند ادیب تمہارے جنازے کے ساتھ نہیں جائے گا۔‘‘

    ساحر نے فی الفور جواب دیا۔

    ’’مجھے اس کا کوئی غم نہیں ، لیکن میں پھر بھی ہر ترقی پسند ادیب کے جنازے میں شریک ہوں گا۔‘‘

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY