میں نے یہ کہا کب کہ منانے کے لیے آ

محمد یوسف پاپا

میں نے یہ کہا کب کہ منانے کے لیے آ

محمد یوسف پاپا

MORE BYمحمد یوسف پاپا

    میں نے یہ کہا کب کہ منانے کے لیے آ

    مجھ کاٹھ کے الو کو پھنسانے کے لیے آ

    میرے لیے آ اور نہ زمانے کے لیے آ

    بچے کو فقط دودھ پلانے کے لیے آ

    ہر روز وہی گوشت وہی گوشت وہی گوشت

    اک دن تو کبھی دال پکانے کے لیے آ

    جو حسن جوانوں کے لیے وقف ہے اس کو

    اک بار تو بوڑھوں کو دکھانے کے لیے آ

    دن میں کبھی ہاتھوں کی صفائی سے گرہ کاٹ

    شب میں کبھی سامان چرانے کے لیے آ

    اس حور کو دیکھا تو یہ کہنے لگا ہر شخص

    آ آ مجھے لنگور بنانے کے لیے آ

    وہ شیخ کہ جس کی کوئی لائن ہی نہیں ہے

    اس کو ذرا لائن پہ لگانے کے لیے آ

    فرسودہ تصور کے مکوڑوں کو مسل دے

    الفت کو ادھر پھینک کمانے کے لیے آ

    مآخذ :

    موضوعات:

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY