کرشن‌ کنہیا

جولیس نحیف دہلوی

کرشن‌ کنہیا

جولیس نحیف دہلوی

MORE BYجولیس نحیف دہلوی

    جو سن لیتا ہے گوش دل سے افسانہ کنہیا کا

    وہ ہو جاتا ہے سچے دل سے دیوانہ کنہیا کا

    نظر آتی ہے جس کو خواب میں وہ صورت دل کش

    وہ اپنا دل بنا لیتا ہے کاشانہ کنہیا کا

    سرور و کیف کی ملتی ہے اس کو لذت دائم

    لگا لیتا ہے ہونٹوں سے جو پیمانہ کنہیا کا

    تم اپنا ہاتھ پھیلاؤ ذرا ساقی کی محفل میں

    کہ بانٹا جا رہا ہے آج پیمانہ کنہیا کا

    کسی پر بند ہونے کا نہیں میخانۂ الفت

    چلے آؤ کھلا رہتا ہے مے خانہ کنہیا کا

    کنہیا کی محبت میں جو جاں پر کھیل جاتا ہے

    اسے سب لوگ کہہ دیتے ہیں دیوانہ کنہیا کا

    نحیفؔ اپنے پرائے سب اسی کے دل میں رہتے ہیں

    سب اپنے ہیں نہیں کوئی بھی بیگانہ کنہیا کا

    مأخذ :
    • کتاب : Aawaz-e-dil (Pg. 99)
    • Author : Jues Naheef Dehlvi

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY