خدا خاموش ہے

ندا فاضلی

خدا خاموش ہے

ندا فاضلی

MORE BYندا فاضلی

    بہت سے کام ہیں

    لپٹی ہوئی دھرتی کو پھیلا دیں

    درختوں کو اگائیں

    ڈالیوں پہ پھول مہکا دیں

    پہاڑوں کو قرینے سے لگائیں

    چاند لٹکائیں

    خلاؤں کے سروں پہ نیلگوں آکاش

    پھیلائیں

    ستاروں کو کریں روشن

    ہواؤں کو گتی دے دیں

    پھدکتے پتھروں کو پنکھ دے کر نغمگی دے دیں

    لبوں کو مسکراہٹ

    انکھڑیوں کو روشنی دے دیں

    سڑک پر ڈولتی پرچھائیوں کو

    زندگی دے دیں

    خدا خاموش ہے!

    تم آؤ تو تخلیق ہو دنیا

    میں اتنے سارے کاموں کو اکیلا کر نہیں سکتا

    مآخذ:

    • کتاب : Shaher Men Gaon (Pg. 117)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY