لفظوں کا پل

ندا فاضلی

لفظوں کا پل

ندا فاضلی

MORE BYندا فاضلی

    مسجد کا گنبد سونا ہے

    مندر کی گھنٹی خاموش

    جزدانوں میں لپٹے آدرشوں کو

    دیمک کب کی چاٹ چکی ہے

    رنگ

    گلابی

    نیلے

    پیلے

    کہیں نہیں ہیں

    تم اس جانب

    میں اس جانب

    بیچ میں میلوں گہرا غار

    لفظوں کا پل ٹوٹ چکا ہے

    تم بھی تنہا

    میں بھی تنہا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY