Anjuman Taraqqi Urdu (Hind), Delhi's Photo'

انجمن ترقی اردو (ہند)، دہلی

دلی, ہندوستان

انجمن ترقی اردو (ہند)، دہلی کا تعارف

انجمن ترقی اردو (ہند) ایک ہندوستانی ادارہ ہے جو اردو زبان کو فروغ دینے کے مقصد سے ملک بھر میں فعال ہے۔ انجمن ترقی اردو ہند کی بنیاد 1903 میں رکھی گئی تھی۔ اس کے پہلے سکریٹری شبلی نعمانی تھے، جب ۱۹۱۲ میں مولوی عبدالحق سیکرٹری منتخب ہوئے۔ چونکہ مولوی صاحب اورنگ آباد (دکن ) میں ملازم تھے وہ انجمن کو اپنے ساتھ لے گئے اور اس طرح حیدرآباد دکن اس کا مرکز بن گیا۔ جب انجمن اورنگ آباد منتقل ہوگئی تو اِس کا نام "انجمنِ ترقّیِ اردو اورنگ آباد دکن" لکھا جانے لگا، اور 1936 میں انجمن کے دہلی منتقل ہونے کے بعد اِس کے نام کے ساتھ "ہند" کا اضافہ ہوگیا اور یہ نام "انجمن ترقّی اردو ہند" ہوگیا۔  تقسیمِ ہند کے بعد مولوی عبدالحق نے پاکستان میں انجمن ترقی اردو کو قائم کیا۔ ۱۹۰۳سے 1980 تک انجمن ہندستان کا سب سے اہم ادارہ تھی اور آج ہندستان میں اردو کے جتنے بھی ادارے ہیں جن میں یونی ورسٹیوں کے شعبہ ہاے اردو بھی شامل ہیں، ان سب کے قیام کا سہرا صرف اور صرف انجمن ترقی اردو (ہند) کو جاتا ہے۔ تقسیمِ ہند کے بعد انجمن علی گڑھ منتقل ہوگئی تھی، مگر ساتویں دہائی کے وسط میں انجمن کے دہلی آنے کے بعد یہ اپنے خود مختار وجود کی بازیابی میں ایک مرتبہ پھر کامیاب ہوگئی۔ اِس وقت انجمن کی تقریباً 600 شاخیں ملک کے طول و عرض میں متحرک اور فعال ہیں جو اردو کے مستقل بالذات زبان کے وجود اور برِّصغیر میں اردو کے وقیع ترین ادب کے طور پر اِس کے ہمہ جہتی فروغ کے لیے کوشاں ہیں۔ یہ ادارہ اپنے پیچھے 116 سالہ تاریخ رکھتا ہے۔ اسی لئے اس ادارہ کا ادبی ذخیرہ بھی قابل قدر ہے، جو اب ریختہ کی ڈجیٹل لائبریری پر دستیاب ہے، یہاں آپ سید حیدر بخش حیدری کی "آرائش محفل"، ابوالفضل کی "آئین اکبری"، وزیر آغا کی "آدھی صدی کے بعد"، فاروقی کی "آسماں محراب"، قرۃ العین حیدر کی "آخر شب کے ہم سفر"، محمد حسن کی "ادبی تنقید"، کشمیری لال ذاکر کی "آدھے چاند کی رات"، مجاز کی "آہنگ"، منٹو کی "آو"، امیر خسرو کی "آئین سکندری"، کلیم الدین احمد کی "اردو تنقید پر ایک نظر"، جمیل جالبی کی "ارسطو سے ایلیٹ تک"، عنوان چشتی کی "اردو شاعری میں ہیئت کے تجربے"، "اردو لغت تاریخی اصول پر"، تمام جلدیں اور جاوید اقبال کی "اپنا گریباں چاک" جیسی ہزاروں قدیم و جدید، تحقیقی، تخلیقی، تنقیدی، تاریخی، طبع زاد اور ترجمہ شدہ کتابیں پڑھ سکتے ہیں، نیز رسائل میں  "آج کل" کے خصوصی شمارے، "اخبار اردو، اسلام آباد"، کے سیکڑوں شمارے، "ارتکاز"، "اردو ادب علی گڑھ، "اردو ادب نئی دہلی، "اردو اورنگ آباد، دکن، "اردوئے معلی، "اظہار، کراچی، "افکار، کراچی، کے زیادہ تر شمارے یہاں آن لائن دستیاب ہیں، استفادہ کے لئے پہل کریں۔

موضوعات