کلکتے کا جو ذکر کیا تو نے ہم نشیں

مرزا غالب

کلکتے کا جو ذکر کیا تو نے ہم نشیں

مرزا غالب

MORE BYمرزا غالب

    INTERESTING FACT

    ۱۸۳۳ء

    کلکتے کا جو ذکر کیا تو نے ہم نشیں

    اک تیر میرے سینے میں مارا کہ ہاے ہاے

    وہ سبزہ زار ہاے مطرا کہ ہے غضب

    وہ نازنیں بتان خود آرا کہ ہاے ہاے

    صبر آزما وہ ان کی نگاہیں کہ حف نظر

    طاقت ربادہ ان کا اشارا کہ ہاے ہاے

    وہ میوہ ہاے تازۂ شیریں کہ واہ واہ

    وہ بادہ ہاے ناب گوارا کہ ہاے ہاے

    مأخذ :
    • کتاب : Deewan-e-Ghalib (Pg. 379)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY