مزاح پر نظمیں

خاموشی

اگرچہ یہ جہان رنگ و بو ہے

غوث خواہ مخواہ حیدرآبادی

باتیں کرو

رات بھر اقرار کی باتیں کرو

غوث خواہ مخواہ حیدرآبادی

سورج

کبھی جب خود سے گھبراتا ہے سورج

غوث خواہ مخواہ حیدرآبادی

دی گئی ہے

ہمیں جو زندگی دی گئی ہے

غوث خواہ مخواہ حیدرآبادی
بولیے