اشعار 8

ہوا کی زد میں پتے کی طرح تھا

وہ اک زخمی پرندے کی طرح تھا

باتوں میں ہے اس کی زہر تھوڑا

تھوڑا سا مزا شراب جیسا

ان کہی کہہ ان سنی باتیں سنا

رہ گیا جو کچھ بھی سوچا سوچ لے

زرد پتے میں کوئی نقطۂ سبز

اپنے ہونے کا پتا کافی ہے

کب تک ان آوارہ موجوں کا تماشا دیکھنا

گن چکے ہو ساعتوں کے تار تو واپس چلو

غزل 13

کتاب 6

دعا پرمنتشر

 

1981

فرہنگ ادبیات

 

1998

متن ومعنی کا تجزیہ

 

1996

قسم ہے کفارے کی

 

2009

قصہ جدید افسانے کا

 

1989

سانپ اور سیڑھیاں

 

2010

 

مزید دیکھیے

"مالیگاؤں" کے مزید مصنفین

  • ادیب مالیگانوی ادیب مالیگانوی
  • ارشد مینا نگری ارشد مینا نگری
  • ظہیر قدسی ظہیر قدسی