Shamim Qasmi's Photo'

شمیم قاسمی

1954 | پٹنہ, ہندوستان

غزل 7

نظم 6

اشعار 3

موئے نے منہ کی کھائی پھر بھی یہ زور زوری

یہ ریختی ہے بھائی تم ریختہ تو جانو

شہر میں امن و اماں ہو یہ ضروری ہے مگر

حاکم وقت کے ماتھے پہ لکھا ہی کچھ ہے

  • شیئر کیجیے

گھر میں آسیب زلزلے کا ہے

اس لیے خود میں ہی سمٹ کے ہیں

  • شیئر کیجیے
 

ای- کتاب 5

آمد و رفت

 

2015

آتش فشاں

 

1983

گمشدہ موسم

 

1984

پابرہنہ

 

2014

پانچ سلاخوں والا پنجرہ

 

1993

 

ویڈیو 7

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر
Faza e Nam mein sadao ka shaur ho jaye

شمیم قاسمی

Hum martaba na samjho rutba mera to jaano

شمیم قاسمی

Kisi train ke niche kat gaya hota

شمیم قاسمی

Missi se aur surma o kakul se kya miyan

شمیم قاسمی

Sabse pehle to arz matla hai

شمیم قاسمی

Sayyal tasawwur hai-hai ubalne ki tarah ka_

شمیم قاسمی

Ye aur baat ke gamle mein ug raha hun main

شمیم قاسمی

آڈیو 6

سب سے پہلے تو عرض مطلع ہے

سیال تصور ہے ابلنے کی طرح کا

فضائے_نم میں صداؤں کا شور ہو جائے

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

مصنفین کے مزید "پٹنہ"

  • کوثر مظہری کوثر مظہری
  • غضنفر غضنفر
  • یعقوب یاور یعقوب یاور
  • شمیم طارق شمیم طارق
  • سلیم شہزاد سلیم شہزاد
  • احمد مشکور احمد مشکور
  • عنوان چشتی عنوان چشتی
  • کالی داس گپتا رضا کالی داس گپتا رضا
  • سلام سندیلوی سلام سندیلوی
  • اختر اورینوی اختر اورینوی