Syed Shakeel Desnavi's Photo'

سید شکیل دسنوی

1941 | اڑیسہ, انڈیا

سید شکیل دسنوی

غزل 18

نظم 5

 

اشعار 7

رشتہ رہا عجیب مرا زندگی کے ساتھ

چلتا ہو جیسے کوئی کسی اجنبی کے ساتھ

  • شیئر کیجیے

موت کے خونخوار پنجوں میں سسکتی ہے حیات

آج ہے انسانیت کی ہر ادا سہمی ہوئی

  • شیئر کیجیے

گرد سفر کے ساتھ تھا وابستہ انتظار

اب تو کہیں غبار بھی باقی نہیں رہا

  • شیئر کیجیے

اس سے بچھڑا تو یوں لگا جیسے

کوئی مجھ میں بکھر گیا صاحب

  • شیئر کیجیے

شکیلؔ ہجر کے زینوں پہ رک گئیں یادیں

اسی مقام پر آ کر ٹھہر گئی شب بھی

  • شیئر کیجیے

کتاب 9

 

"اڑیسہ" کے مزید مصنفین

 

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے