Umar Ansari's Photo'

عمر انصاری

1912 - 2005 | لکھنؤ, ہندوستان

غزل 8

اشعار 12

مسافروں سے محبت کی بات کر لیکن

مسافروں کی محبت کا اعتبار نہ کر

  • شیئر کیجیے

باہر باہر سناٹا ہے اندر اندر شور بہت

دل کی گھنی بستی میں یارو آن بسے ہیں چور بہت

چلے جو دھوپ میں منزل تھی ان کی

ہمیں تو کھا گیا سایہ شجر کا

کتاب 11

حرف ناتمام

 

1978

حاصل کلام

 

1998

حاصل کلام

 

1998

کشید جہاں

 

1987

کلیات عمر انصاری

حصہ ۔ 001

2001

نقش دوام

 

1982

صنم کدہ

 

1973

ساز بیخودی

 

1965

ترانۂ نعت

 

1975

عمر انصاری

فن اور شخصیت ایک نظر میں

 

تصویری شاعری 2

مسافروں سے محبت کی بات کر لیکن مسافروں کی محبت کا اعتبار نہ کر

مسافروں سے محبت کی بات کر لیکن مسافروں کی محبت کا اعتبار نہ کر

 

"لکھنؤ" کے مزید مصنفین

  • علی عباس حسینی علی عباس حسینی
  • نیر مسعود نیر مسعود
  • رجب علی بیگ سرور رجب علی بیگ سرور
  • عابد سہیل عابد سہیل
  • عشرت ناہید عشرت ناہید
  • انیس اشفاق انیس اشفاق
  • رام لعل رام لعل
  • مسرور جہاں مسرور جہاں
  • عبدالحلیم شرر عبدالحلیم شرر
  • حیات اللہ انصاری حیات اللہ انصاری