اپنا دیوانہ بنا کر لے جائے

آفتاب حسین

اپنا دیوانہ بنا کر لے جائے

آفتاب حسین

MORE BYآفتاب حسین

    اپنا دیوانہ بنا کر لے جائے

    کبھی وہ آئے اور آ کر لے جائے

    روز بنیاد اٹھاتا ہوں نئی

    روز سیلاب بہا کر لے جائے

    حسن والوں میں کوئی ایسا ہو

    جو مجھے مجھ سے چرا کر لے جائے

    رنگ رخسار پہ اتراؤ نہیں

    جانے کب وقت اڑا کر لے جائے

    کسے معلوم کہاں کون کسے

    اپنے رستے پہ لگا کر لے جائے

    آفتابؔ ایک تو ایسا ہو کہیں

    جو ہمیں اپنا بنا کر لے جائے

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    اپنا دیوانہ بنا کر لے جائے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY