اپنے ہم راہ جو آتے ہو ادھر سے پہلے

ابن انشا

اپنے ہم راہ جو آتے ہو ادھر سے پہلے

ابن انشا

MORE BYابن انشا

    اپنے ہم راہ جو آتے ہو ادھر سے پہلے

    دشت پڑتا ہے میاں عشق میں گھر سے پہلے

    چل دیے اٹھ کے سوئے شہر وفا کوئے حبیب

    پوچھ لینا تھا کسی خاک بسر سے پہلے

    عشق پہلے بھی کیا ہجر کا غم بھی دیکھا

    اتنے تڑپے ہیں نہ گھبرائے نہ ترسے پہلے

    جی بہلتا ہی نہیں اب کوئی ساعت کوئی پل

    رات ڈھلتی ہی نہیں چار پہر سے پہلے

    ہم کسی در پہ نہ ٹھٹکے نہ کہیں دستک دی

    سیکڑوں در تھے مری جاں ترے در سے پہلے

    چاند سے آنکھ ملی جی کا اجالا جاگا

    ہم کو سو بار ہوئی صبح سحر سے پہلے

    مآخذ:

    • کتاب : Is Basti ke ik Kooche Men (Pg. 143)
    • Author : Ibn Insha
    • مطبع : Akif Book Depo Daryaganj New Delhi

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY