اور کچھ لفظ گڑھوں صنعت ایہام غلط

جمیلؔ مظہری

اور کچھ لفظ گڑھوں صنعت ایہام غلط

جمیلؔ مظہری

MORE BYجمیلؔ مظہری

    اور کچھ لفظ گڑھوں صنعت ایہام غلط

    ہے یہ خود اپنی خودی اس کا خدا نام غلط

    جنبشیں اس کی غلط ہیں کہ خود ابرو میں ہے خم

    اس کی تعمیل میں یہ گردش ایام غلط

    یہ سفر کیا کہ جہاں چھاؤں ملی بیٹھ گئے

    دھوپ کتنی ہی کڑی ہو مگر آرام غلط

    ہوس دانہ اگر ہے تو سوئے دام چلو

    ہوس دانہ و اندیشگئ دام غلط

    اس سے بہتر تھی کہیں گوشۂ آرام میں نیند

    یہ سفر کیا کہ ہر اک راہ ہر اک گام غلط

    نہیں افسوں ہی کو افسانے کی منزل معلوم

    غلط آغاز کا ہوتا ہی ہے انجام غلط

    مظہریؔ چل نہ سکے وقت سبک گام کے ساتھ

    ہم سفر پیروئ وقت سبک گام غلط

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY