بن کے سایہ ہی سہی سات تو ہوتی ہوگی

امیر امام

بن کے سایہ ہی سہی سات تو ہوتی ہوگی

امیر امام

MORE BYامیر امام

    بن کے سایہ ہی سہی سات تو ہوتی ہوگی

    کم سے کم تجھ میں تری ذات تو ہوتی ہوگی

    یہ الگ بات کوئی چاند ابھرتا نہ ہو اب

    دل کی بستی میں مگر رات تو ہوتی ہوگی

    دھوپ میں کون کسے یاد کیا کرتا ہے

    پر ترے شہر میں برسات تو ہوتی ہوگی

    ہم تو صحرا میں ہیں تم لوگ سناؤ اپنی

    شہر سے روز ملاقات تو ہوتی ہوگی

    کچھ بھی ہو جائے مگر تیرے طرفدار ہیں سب

    زندگی تجھ میں کوئی بات تو ہوتی ہوگی

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    امیر امام

    امیر امام

    RECITATIONS

    امیر امام

    امیر امام

    امیر امام

    بن کے سایہ ہی سہی سات تو ہوتی ہوگی امیر امام

    مأخذ :
    • کتاب : NAQSH-E-PA HAWAON KE (Pg. 26)
    • Author : AMEER IMAM
    • اشاعت : 2013

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY