بے سمت راستوں پہ صدا لے گئی مجھے

عفت زریں

بے سمت راستوں پہ صدا لے گئی مجھے

عفت زریں

MORE BYعفت زریں

    بے سمت راستوں پہ صدا لے گئی مجھے

    آہٹ مگر جنوں کی بچا لے گئی مجھے

    پتھر کے جسم موم کے چہرے دھواں دھواں

    کس شہر میں اڑا کے ہوا لے گئی مجھے

    ماتھے پہ اس کے دیکھ کے لالی سندور کی

    زخموں کی انجمن میں حنا لے گئی مجھے

    خوشبو پگھلتے لمحوں کی سانسوں میں کھو گئی

    خوشبو کی وادیوں میں صبا لے گئی مجھے

    جو لوگ بھیک دیتے ہیں چہرے کو دیکھ کر

    زریںؔ انہیں کے در پہ انا لے گئی مجھے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY